• FFC announces half yearly results for period ended June 30, 2021

  • CPI Preview: Inflation to clock in at 8.17% YoY in July’21

  • ATLH: Bottom line turns green at Rs1.3bn in 4QFY21

  • PSX Closing Bell: Another Brick in the Wall

  • Weekly SPI Increases by 12.2% YoY

  • KCCI opposes lockdown, suggests forceful vaccination, strict implementation of SOPs

  • JS Investments approves merger of JS Value Fund with and into JS Growth Fund

  • وزیراعظم عمران خان کی ایف بی آر کی بہترین کارکردگی پر تعریف

  • نئے مالی سال کے پہلے ماہ مہنگائی میں مسلسل اضافہ

  • ایل این جی کی 15ڈالرز فی ایم ایم بی ٹی یو قیمت قبول کرنا مجبوری تھی، پیٹرولیم ڈویژن

  • پاکستان نےتاریخ کی سب سے مہنگی ایل این جی کی خریداری کی،بلوم برگ

  • ملکی زرمبادلہ کے ذخائر میں 25 کروڑ ڈالر کی کمی

  • پیٹرول کی قیمت میں1روپے71پیسے کا اضافہ کیا جا رہا ہے،شہبازگِل

  • امریکی ڈالر کی قدرمیں54پیسے اضافہ،162روپے43پیسےکاہوگیا

  • سرمایہ کارملکی سلامتی کی صورتحال سے مطمئن ہیں، سروے

  • پاکستان میں معاشی بحالی میں تیزی دیکھی جارہی ہے، آئی ایم ایف

  • ایف بی آر نےکاروبارکےانضمام کےلیےکمیٹی تشکیل دے دی

چینی کی فی کلوقیمت میں17روپےاضافہ،88روپے24 پیسےمقرر

حکومت نے چینی کی قیمت 88 روپے 24 پیسے مقرر کردی

 وزارت صنعت و پیداوار نے نوٹی فکیشن بھی جاری کر دیا ہے۔

وزارت صنعت و پیداوار کی جانب سے جاری نوٹی فکیشن کے

 مطابق دسمبر 2020 سے مئی 2021 تک 24 لاکھ 74 ہزار ٹن

 چینی فروخت ہوئی، چینی کی ایکس مل ریٹ 70 روپے 42 پیسے

 فی کلو گرام جب کہ ریٹیل پرائس 88 روپے 24 پیسے فی کلو گرام ہوگی۔

 نئی قیمتیں فوری طور پر نافذ العمل ہوں گی۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز وزیر خزانہ شوکت ترین

کی سربراہی میں وفاقی کابینہ کی اقتصادی رابطہ کمیٹی

 (ای سی سی) کا اجلاس ہوا تھا جس میں یوٹیلیٹی اسٹورز

 کارپوریشن (یو ایس سی) کے ذریعے آٹے، گھی اور

چینی کی قیمتوں میں 53 فیصد تک اضافے کا فیصلہ کیا گیا۔

جس کے بعد گھی کی فی کلو قیمت 170 روپے سے بڑھ

کر 260 روپے فی کلو ہوگئی۔ اس کے علاوہ آٹے کی

فی 20 کلو بوری 800 روپے سے 950 روپے کی ہوگئی۔

اسی طرح چینی کی موجودہ قیمت 68 روپے سے بڑھا کر 85 روپے کردی گئی ہے۔