• کے الیکٹرک نے بجلی کے نرخوں میں 5.27 روپے تک اضافے کی تجویز پیش کردی

  • پی ایس ایکس: کے ایس ای-100 نے 2020 کے بعد سب سے زیادہ ہفتہ وار 4.9 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا

  • روپے 181.58/امریکی ڈالر پر بند ہوا، چھ سیشنز میں 6.59 روپے کا اضافہ

  • نئی حکومت کا پیٹرول کی قیمتیں برقرار رکھنے کا فیصلہ

  • نیپرا نے بجلی کی قیمت میں 4.85 روپے فی یونٹ اضافے کی منظوری دے دی

  • ایس بی پی کے ذخائر میں ایک ہفتے میں 470 ملین ڈالر کی کمی

  • پاکستان کو ایک مہینے میں 2.8 بلین ڈالر کی اب تک کی سب سے زیادہ ترسیلات موصول ہوئی ہیں

  • رمضان المبارک کے پہلے 10 دنوں میں یوٹیلٹی اسٹورز کی فروخت میں 3 ارب روپے کی کمی

  • 16 اپریل 2022 سے پٹرول کی قیمتوں میں27 روپے فی لیٹر اضافہ متوقع

  • بجٹ خسارہ 3.74 ٹریلین روپے تک پہنچنے کا امکان

  • کے الیکٹرک نے بجلی کے نرخوں میں 5.27 روپے تک اضافے کی تجویز پیش کردی

  • پی ایس ایکس: کے ایس ای-100 نے 2020 کے بعد سب سے زیادہ ہفتہ وار 4.9 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا

  • روپے 181.58/امریکی ڈالر پر بند ہوا، چھ سیشنز میں 6.59 روپے کا اضافہ

  • نئی حکومت کا پیٹرول کی قیمتیں برقرار رکھنے کا فیصلہ

  • نیپرا نے بجلی کی قیمت میں 4.85 روپے فی یونٹ اضافے کی منظوری دے دی

  • ایس بی پی کے ذخائر میں ایک ہفتے میں 470 ملین ڈالر کی کمی

  • پاکستان کو ایک مہینے میں 2.8 بلین ڈالر کی اب تک کی سب سے زیادہ ترسیلات موصول ہوئی ہیں

  • رمضان المبارک کے پہلے 10 دنوں میں یوٹیلٹی اسٹورز کی فروخت میں 3 ارب روپے کی کمی

  • 16 اپریل 2022 سے پٹرول کی قیمتوں میں27 روپے فی لیٹر اضافہ متوقع

  • بجٹ خسارہ 3.74 ٹریلین روپے تک پہنچنے کا امکان

نئی حکومت کا پیٹرول کی قیمتیں برقرار رکھنے کا فیصلہ

Petroleum Prices

نئی حکومت نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں 30 اپریل تک برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔

ذرائع نے بتایا کہ 16 اپریل سے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں برقرار رہیں گی۔

پٹرول کی موجودہ قیمت 149.86 روپے فی لیٹر ہے، جب کہ ڈیزل، مٹی کے تیل اور لائٹ ڈیزل کی فی لیٹر قیمت بالترتیب 144.15 روپے، 125.56 روپے اور 118.31 روپے ہے۔

یاد رہے کہ آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی (اوگرا) نے جمعرات کو پیٹرولیم کی قیمتوں میں 119 روپے تک اضافے کی سفارش کی تھی جس کا اطلاق 16 اپریل 2022 سے ہوگا۔

ریگولیٹر نے ہائی اسپیڈ ڈیزل (ایچ ایس ڈی) کی قیمتوں میں 119 روپے فی لیٹر، پیٹرول کی قیمت میں 83 روپے 50 پیسے فی لیٹر اور مٹی کے تیل کی قیمتوں میں 77.56 روپے فی لیٹر اضافے کی تجویز پیش کی تھی۔

واضح رہے کہ فروری میں سابق وزیراعظم عمران خان نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں 10 روپے فی لیٹر کمی کا اعلان کیا تھا اور نئی قیمتیں مالی سال 23 کے بجٹ تک برقرار رہنے کا اعلان کیا تھا۔